World News – Rohingya & Muslims

0
205
Rohingya

غیر ملکی میڈیا کے مطابق فوجی آپریشن کے دوران مسلمانوں کو زندہ جلایا گیا، خواتین کی آبرو ریزی کی گئی، سینکڑوں افراد تاحال لاپتہ ہیں۔

رنگون: (ویب ڈیسک) روہنگیا مسلمانوں نے غیر ملکی میڈیا کے سامنے پہلی بار اپنے اوپر ہونے والے ظلم کی داستانیں سنائی ہیں۔ بین الاقوامی صحافیوں کی ایک ٹیم کو سخت سیکیورٹٰٗی میں میانمار کے صوبے راکھین کا دورہ کرایا گیا جہاں مسلمان روہنگیا خواتین نے دردناک انکشافات کرتے ہوئے بتایا کہ میانمار کی فوج نے نا صرف ان کی املاک کو تباہ بلکہ مردوں کو ہلاک کرنے کے ساتھ ساتھ خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی بھی کی۔ خواتین نے بتایا کہ فوجی آپریشن کے دوران مسلمان مردوں کو زندہ جلایا گیا۔ بچوں سمیت سینکڑوں افراد کو قید میں ڈال دیا گیا۔ آپریشن کے دوران لاپتہ ہونے والے افراد کا ابھی تک کوئی سراغ نہیں مل رہا۔

World News - Rohingya Women with Her Boy
World News – Rohingya Women with Her Boy

خیال رہے کہ اقوام متحدہ کے مطابق کم ازکم 75 ہزار روہنگیا مسلمان اپنی جان و مال کے خوف سے بنگلا دیش میں پناہ لیے ہوئے ہیں۔ اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ میانمار سیکیورٹی فورسز نے خواتین کی اجتماعی زیادتی کی، انھیں تشدد کا نشانہ بنایا، ان کے گھروں کو نذر آتش کر دیا جو انسانیت کے خلاف جرائم کے زمرے میں آتا ہے۔

World News - Kids of Rohingya
World News – Kids of Rohingya

میانمار کی حکومت نے ابھی تک غیر ملکی صحافیوں کو اس علاقے میں جانے کی اجازت نہیں دی تھی۔ حکومت کی جانب سے اجازت ملنے کے بعد صحافیوں کو ماؤنگ ڈو لے جایا گیا، جہاں انہوں نے متاثرہ افراد سے گفتگو کی۔ صحافیوں نے جیسے ہی روہنگیا مسلمانوں سے بات چیت کی تو انہوں نے فوری طور پر کہا کہ سیکیورٹی فورسز انہیں تشدد کا نشانہ بنا رہی ہیں۔ دوسری جانب میانمار حکومت ان کو بے بنیاد الزامات قرار دیتی آئی ہے۔

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here