World News – India the Second Biggest Country Providing Explosives to ISIS

0
139
india
isis-1World News - India the Second Biggest Country Providing Explosives to ISIS
World News – India the Second Biggest Country Providing Explosives to ISIS

20 ممالک کی 51 کمپنیاں انتہا پسند گروپ کو اسلحہ اور گولہ بارود دے رہی ہیں، 13ترکی اور 7 بھارت سے تعلق رکھتی ہیں، اسلحہ براہ راست دینے کا کوئی ثبوت نہیں ملا، کونفلکٹ آرمامنٹ ریسرچ کی رپورٹ، بھارتی وزارت دفاع کا تبصرے سے انکار

لندن: (روزنامہ دنیا) بھارت نے ایک بار پھر بغل میں چھری، منہ میں رام رام والا محاورہ سچ کر دکھایا ہے ۔ عراق اور شام میں انتہا پسند تنظیم داعش کو قتل و غارت کے لیے بم اور بارودی مواد فراہم کرنے والا دوسرا بڑا ملک بھارت نکلا۔

لندن میں قائم “کونفلکٹ آرمامنٹ ریسرچ” نامی ادارے کے مطابق شام اور عراق میں داعش جو بم اور دھماکا خیز مواد استعمال کر رہی ہے اس کے تار، سیفٹی فیوز، ڈیٹو نیٹرز اور دیگر سامان بھارتی کمپنیوں کا تیار کردہ ہے ۔ واضح رہے کہ یہ تنظیم دنیا بھر میں جاری فوجی ہتھیاروں کی سپلائی اور متعلقہ ممالک پر نظر رکھتی ہے۔

رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ داعش 51 کمپنیوں کا تیار کردہ اسلحہ اور گولا بارود استعمال کر رہی ہے جو 20 ممالک سے تعلق رکھتا ہے ۔ ان میں روس، امریکا، برازیل، ایران، بلجیم، ہالینڈ اور جاپان بھی شامل ہیں۔ بھارتی ادارے دوسر ے نمبر پر ہیں ۔ سرفہرست ترکی ہے جس کا تیار کردہ 700 اقسام کا اسلحہ داعش استعمال کر رہی ہے ۔ داعش کو اسلحہ اور گولا بارود فراہم کرنے والوں میں 13 ترک اور 7 بھارتی کمپنیاں نمایاں ہیں ۔ رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ بھارت نے لائسنس کے تحت لبنان اور ترکی کو اسلحہ بیچا ہے ۔ بھارتی وزارت دفاع نے اس رپورٹ پر تبصرے سے انکار کردیا ہے ۔ کونفلکٹ آرمامنٹ ریسرچ کے مطابق اب تک اس بات کے شواہد نہیں ملے کہ بھارتی کمپنیوں نے داعش کو یہ سارا مال براہ راست فراہم کیا ہو ۔

 

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here