World News – مسلمان مرد سے تعلقات، غیرت کے نام پر اسرائیلی خاتون قتل

0
252
World News - Honor Killing of Israeli Girl

مقتولہ کی عمر صرف 17 سال تھی اور اسلام قبول کرنا چاہتی تھی۔ مسلمان سے تعلقات اور مستقبل کے اداروں کا علم ہونے پر باپ نے غیرت کے نام پر قتل کر دیا۔

یروشلم: (ویب ڈیسک) اسرائیل کی رہائشی ایک 17 سالہ لڑکی کو اس کے والد نے مسلمان مرد سے تعلقات کی وجہ سے قتل کر دیا ہے۔ مقتولہ مذہبی طور پر عیسائی تھی اور اسرائیل قصبے راملی کی رہائشی تھی۔ مقتولہ کے والد سیمی کیرا کو اپنی بیٹی کے مسلمان مرد سے ملاقاتوں اور تعلقات پر سخت اعتراض تھا۔

اسرائیلی میڈیا کے مطابق مقتولہ ہینریتی کی والدہ نے پولیس کو دیے گئے اپنے بیان میں کہا ہے کہ اس کا شوہر بہت ذلت محسوس کر رہا تھا، اس لیے اس نے اپنی بیٹی کو قتل کرنے کا فیصلہ کیا۔ اس نے بتایا کہ ہم نے اور خاندان کے دیگر افراد نے بہت کوشش کی کہ ہماری بیٹی مسلمان مرد سے تعلق ختم کر دے لیکن وہ نہیں مانی۔ اس پر تھوڑی سختی کی گئی تو اس نے گھر بار چھوڑ دیا جس کے بعد اسے 13 جون کو قتل کر دیا گیا۔

میڈیا کے مطابق گھر سے بھاگنے کے بعد ہینریتی نے مختلف جگہوں پر چھپ کر دن گزارے۔ اپنے قتل سے ایک ہفتہ قبل اس نے اپنے خاندان کے افراد کیخلاف پولیس کو درخواست دی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ اس کی فیملی نے اسے تشدد کا نشانہ بنایا۔

وقت گزرتا رہا لیکن جیسے ہی مقتولہ ہینرتی نے اپنے ایک رشتہ دار کو بتایا کہ وہ اسلام قبول کرنے جا رہی ہے تو اس کا خاندان اور والد بڑھک اٹھے اور اسے قتل کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ ہینرتی کی لاش اس کے گھر کے کچن سے ملی۔ پولیس نے سیمی کیخلاف مقدمہ درج کر کے معاملے کی تفتیش شروع کر دی ہے۔

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here